Sayings of the Messenger

 

‏بِسْمِ اللهِ الرَّحْمَنُ الرَّحِيم

In the Name of Allah, the Most Gracious, the Most Merciful

شروع اللہ کے نام سے جو بہت مہربان ہے رحم والا

{‏أَوْزَارَهَا‏}‏ آثَامَهَا حَتَّى لاَ يَبْقَى إِلاَّ مُسْلِمٌ‏.‏ ‏{‏عَرَّفَهَا‏}‏ بَيَّنَهَا‏.‏ وَقَالَ مُجَاهِدٌ ‏{‏مَوْلَى الَّذِينَ آمَنُوا‏}‏ وَلِيُّهُمْ‏.‏ ‏{‏عَزَمَ الأَمْرُ‏}‏ جَدَّ الأَمْرُ ‏{‏فَلاَ تَهِنُوا‏}‏ لاَ تَضْعُفُوا‏.‏ وَقَالَ ابْنُ عَبَّاسٍ ‏{‏أَضْغَانَهُمْ‏}‏ حَسَدَهُمْ‏.‏ ‏{‏آسِنٍ‏}‏ مُتَغَيِّرٍ‏.‏

اَوزَارَھَا اپنے گناہ دہر دے، مسلمان کے سوا کوئی باقی نہ رہے گا۔ عَرَّفَھَا اس کو بیان کر دے گا۔ مجاہد نے کہا مَولٰی الَّذِینَ اٰمَنُوا سے ولی یعنی کارساز مراد ہے۔ عَزَم الامرُ جب لڑائی کا ارادہ پکا ہو جائے۔ فَلَا تَھِنُوا سستی نہ کرو۔ اور ابن عباسؓ نے کہا اَضغَانَھُم کا معنی ان کا حسد کینہ۔ اٰسِنٍ سرا پانی۔

 

Chapter No: 1

باب ‏{‏وَتُقَطِّعُوا أَرْحَامَكُمْ‏}‏

"... And sever your ties of kinship." (V.47:22)

باب : اللہ تعالیٰ کے اس قول وَ تُقَطِّعُوا اَرحَامَکُم کی تفسیر

حَدَّثَنَا خَالِدُ بْنُ مَخْلَدٍ، حَدَّثَنَا سُلَيْمَانُ، قَالَ حَدَّثَنِي مُعَاوِيَةُ بْنُ أَبِي مُزَرَّدٍ، عَنْ سَعِيدِ بْنِ يَسَارٍ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ ـ رضى الله عنه ـ عَنِ النَّبِيِّ صلى الله عليه وسلم قَالَ ‏"‏ خَلَقَ اللَّهُ الْخَلْقَ، فَلَمَّا فَرَغَ مِنْهُ قَامَتِ الرَّحِمُ فَأَخَذَتْ بِحَقْوِ الرَّحْمَنِ فَقَالَ لَهَا مَهْ‏.‏ قَالَتْ هَذَا مَقَامُ الْعَائِذِ بِكَ مِنَ الْقَطِيعَةِ‏.‏ قَالَ أَلاَ تَرْضَيْنَ أَنْ أَصِلَ مَنْ وَصَلَكِ وَأَقْطَعَ مَنْ قَطَعَكِ‏.‏ قَالَتْ بَلَى يَا رَبِّ‏.‏ قَالَ فَذَاكِ لَكِ ‏"‏‏.‏ قَالَ أَبُو هُرَيْرَةَ اقْرَءُوا إِنْ شِئْتُمْ ‏{‏فهَلْ عَسَيْتُمْ إِنْ تَوَلَّيْتُمْ أَنْ تُفْسِدُوا فِي الأَرْضِ وَتُقَطِّعُوا أَرْحَامَكُمْ‏}‏

Narrated By Abu Huraira : The Prophet said, "Allah created His creation, and when He had finished it, the womb, got up and caught hold of Allah whereupon Allah said, "What is the matter?' On that, it said, 'I seek refuge with you from those who sever the ties of Kith and kin.' On that Allah said, 'Will you be satisfied if I bestow My favours on him who keeps your ties, and withhold My favours from him who severs your ties?' On that it said, 'Yes, O my Lord!' Then Allah said, 'That is for you.' " Abu Huraira added: If you wish, you can recite: "Would you then if you were given the authority. do mischief in the land and sever your ties of kinship. (47. 22)

ہم سے خالد بن مخلد نے بیان کیا، کہا ہم سے سلیمان بن بلال نے، کہا مجھ سے معاویہ بن ابی مزرد نے، انہوں نے سعید بن یسار سے، انہوں نے ابو ہریرہؓ سے، انہوں نے نبیﷺ نے، آپؐ نے فرمایا اللہ جلّ شانہ جب سب مخلوقات پیدا کر چکا اس وقت ناطہ (مجسم ہو کر) اٹھ کھڑا ہوا اور پروردگار کی کمر تھام لی۔ اللہ تعالٰی نے فرمایا ہائیں (یہ کیا کرتا ہے)۔ وہ عرض کرنے لگا میں تیری پناہ چاہتا ہوں۔ ایسا نہ ہو کوئی مجھ کو کاٹے (ناطہ توڑے، برادری چھوڑے) اللہ تعالٰی نے فرمایا کیا تو اس پر راضی نہیں کہ جو کوئی تجھ کو جوڑے وہ مجھ سے جوڑے اور جو کوئی تجھ کو توڑے وہ مجھ سے توڑے۔ اس وقت ناطہ کہنے لگا میں اس پر راضی ہوں۔ پروردگار نے فرمایا ایسا ہی ہو گا۔ ابو ہریرہؓ کہتے تھے اگر تم چاہو تو اس حدیث کی تائید میں (سورۃ محمد کی) یہ آیت پڑھو ۔ تم سے تو یہ امید ہےاگر کہیں تم کو حکومت مل جائے تو سارے ملک میں دھند مچا دو، ناطہ کاٹ ڈالو۔


حَدَّثَنَا إِبْرَاهِيمُ بْنُ حَمْزَةَ، حَدَّثَنَا حَاتِمٌ، عَنْ مُعَاوِيَةَ، قَالَ حَدَّثَنِي عَمِّي أَبُو الْحُبَابِ، سَعِيدُ بْنُ يَسَارٍ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، بِهَذَا، ثُمَّ قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم اقْرَءُوا إِنْ شِئْتُمْ ‏{‏فَهَلْ عَسَيْتُمْ‏}‏

Narrated By Abu Huraira : (As above,but added) Then Allah's Apostle said, "Recite if you wish: "Would you then."... (47.22)

ہم سے ابراہیم بن حمزہ نے بیان کیا، کہا ہم سے حاتم نے، انہوں نے معاویہؓ سے، کہا مجھ سے میرے چچا ابو الحباب سعید بن یسار نے، انہوں نے ابو ہریرہؓ سے یہی حدیث اس میں یوں ہے پھر رسول اللہ ﷺ نے فرمایا اگر تم چاہو تو یہ آیت پڑھو فَھَل عَسَیتُم اِ ن تولیتم۔


حَدَّثَنَا بِشْرُ بْنُ مُحَمَّدٍ، أَخْبَرَنَا عَبْدُ اللَّهِ، أَخْبَرَنَا مُعَاوِيَةُ بْنُ أَبِي الْمُزَرَّدِ، بِهَذَا قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صلى الله عليه وسلم ‏"‏ وَاقْرَءُوا إِنْ شِئْتُمْ ‏{‏فَهَلْ عَسَيْتُمْ‏}‏

Narrated By Muawiya bin Abi Al-Muzarrad : Allah's Apostle, said, "Recite if you wish: Would you then if you were given the authority." (47.22)

ہم سے بشر بن محمد نے بیان کیا، کہا ہم کو عبداللہ بن مبارک نے، کہا ہم کو معاویہ بن ابی مزرد نے، پھر یہی حدیث بیان کی۔ اس میں بھی یوں ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا اگر تم چاہو تو یہ آیت پڑھو فَھَل عَسَیتُم الخ